• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

چھاتی کے سرطان سے آگاہی کیلئے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا،‘ ثمینہ علوی

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی،نامہ نگار خصوصی) خاتون اول بیگم ثمینہ عارف علوی نے کہا ہے کہ خواتین کو بااختیار بنانے اور خصوصی افراد کو تعلیم اور ہنر سکھا کر معاشرے کا مفید شہری بنایا جا سکتا ہے۔ چھاتی کے سرطان کے بارے میں قومی آگاہی مہم جاری ہے‘ آگاہی پھیلانے میں معاشرے کے تمام طبقات کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔ فارن آفس ویمن ایسوسی ایشن نے کووڈ 19کے دوران سماجی بہبود کے کاموں میں اہم کردار ادا کیا۔ انہوں نے یہ بات ہفتہ کو یہاں فارن آفس ویمن ایسوسی ایشن کے سالانہ چیریٹی بازار کا افتتاح کرتے ہوئے کہی۔ ایسوسی ایشن کی پیٹرن انچیف مہرین قریشی نے خاتون اول کا خیرمقدم کیا۔ چیریٹی بازار میں مختلف سفارت خانوں اور ہائی کمیشنز نے اپنے سٹال لگائے۔ خاتون اول نے فیتہ کاٹ کر بازار کا افتتاح کیا جس کے بعد انہوں نے مختلف ممالک کی طرف سے لگائے جانے والے سٹالز کا دورہ کیا۔ اس موقع پر سنیٹر ولید اقبال اور سنیٹر فیصل جاوید خان سمیت سماجی شخصیات بھی موجود تھیں۔ خاتون اول نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایسوسی ایشن سماجی بہبود کے حوالے سے اہم کردار ادا کر رہی ہے، چیریٹی بازار میں تعاون فراہم کرنے پر تمام سفارت خانے، سفارتی مشنز اور مختلف تنظیمیں مبارکباد کی مستحق ہیں۔ فارن آفس ویمن ایسوسی ایشن نے کووڈ19 کے دوران سماجی بہبود کے کاموں میں اہم کردار ادا کیا‘ اسکے علاوہ چھاتی کے سرطان کے بارے میں آگاہی پھیلانے میں بھی تنظیم کا کردار اہمیت کا حامل ہے۔ ہماری خواہش ہے کہ اس بیماری کے بارے میں شہریوں میں زیادہ سے زیادہ آگاہی پھیلائی جائے اور معائنے کی اہمیت کو اجاگر کیا جائے۔ خاتون اول نے کہا کہ پاکستانی مصنوعات بہترین ہیں اور یہ کسی بھی ملک کی مصنوعات کے ساتھ مقابلہ کر سکتی ہیں۔ خواتین کو بااختیار بنانا ہماری حکومت کی ترجیح ہے، اسکے ساتھ ساتھ معذور افراد بھی ہماری توجہ کے مستحق ہیں۔ معذور افراد کو تعلیم اور ہنر کی فراہمی سے انکے بہت سارے مسائل حل ہو سکتے ہیں۔ ایسے افراد کو معاشرے کا مفید شہری بنانا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے نوجوان باعلم، حساس اور باصلاحیت ہیں‘ ہمیں اپنے نوجوانوں کو سازگار ماحول فراہم کرنا ہوگا۔ ہم سمجھتے ہیں کہ خواتین اور خصوصی افراد کو تعلیم اور ہنر سکھا کر انہیں معاشرے کا مفید شہری بنایا جا سکتا ہے۔ اس موقع پر سیکرٹری خارجہ سہیل محمود نے کہا کہ کووڈ کی وجہ سے دو سال کے وقفے کے بعد یہ چیریٹی بازار منعقد ہو رہا ہے۔ مختلف ثقافتوں کے درمیان رابطے بڑھانے میں فارن آفس اور ویمن ایسوسی ایشن کلیدی کردار ادا کر رہے ہیں۔ اسکے علاوہ فلاحی کاموں کیلئے عطیات اکٹھے کرنے اور انہیں مستحقین میں تقسیم کرنے میں بھی ایسوسی ایشن کا اہم کردار ہے۔ ایسوسی ایشن پاکستان کی سماجی اور ثقافتی اقدار کو روشناس کرا رہی ہے۔ ایسوسی ایشن کی صدر مہوش سہیل نے مہمانوں کا خیرمقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ فارن آفس ویمن ایسوسی ایشن کے قیام کو70 سال سے زائد ہو گئے ہیں۔ یہ ایسوسی ایشن وزارت خارجہ کے نچلے درجے کے ملازمین کے بچوں کو تعلیم و صحت کی سہولیات کی فراہمی اور زلزلہ، کووڈ سمیت دیگر قدرتی آفات سے نمٹنے کیلئے بھی کردار ادا کر رہی ہے۔
اسلام آباد سے مزید