• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بیٹے کو تاریکی میں پرواز کا کہا گیا، تحقیقات کی جائیں: والد مرحوم پائلٹ

—مرحوم انسٹریکٹر پائلٹ قاضی اجمل کی دورانِ پرواز فائل فوٹو
—مرحوم انسٹریکٹر پائلٹ قاضی اجمل کی دورانِ پرواز فائل فوٹو

مرحوم انسٹریکٹر پائلٹ قاضی اجمل کے والد قاضی سجاد کا کہنا ہے کہ میرے بیٹے کو رات کی تاریکی میں پرواز کرنے کا کہا گیا، موت کی تحقیقات کی جائیں۔

’جیو نیوز‘ سے گفتگو کرتے ہوئے مرحوم انسٹریکٹر پائلٹ قاضی اجمل کے والد قاضی سجاد نے بتایا کہ جیرو کاپٹر میں نائٹ فلائنگ کا بندوبست نہیں تھا۔

انہوں نے بتایا کہ قاضی اجمل نے متعلقہ ادارے کے افسر کو نائٹ فلائنگ سے متعلق بتایا تھا۔

مرحوم پائلٹ کے والد نے مزید کہا کہ قاضی اجمل نے آخری کال پر کہا تھا کہ 1600 فٹ کی بلندی ہے، کچھ نظر نہیں آ رہا۔

قاضی سجاد نے گفتگو کے دوران حکومت سے یہ مطالبہ بھی کیا کہ میرے بیٹے قاضی اجمل کی موت کی تحقیقات کی جائیں۔

واضح رہے کہ 3 دن سے لاپتہ انسٹریکٹر پائلٹ قاضی اجمل کی لاش کنڈ ملیر بلوچستان سے ملی تھی۔

قاضی اجمل کا جیرو کاپٹر بھی کنڈ ملیر کے علاقے میں گرا پایا گیا تھا۔

مرحوم پائلٹ قاضی اجمل کی نمازِ جنازہ ان کے آبائی گاؤں میں ادا کی جائے گی جس کے بعد انہیں سپردِ خاک کیا جائے گا۔

قومی خبریں سے مزید