• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

خلیل خان جیل میں سزا کاٹ رہاہے،گریٹر مانچسٹر پولیس

مانچسٹر(غلام مصطفی مغل) گریٹر مانچسٹر پولیس کی جانب سے جاری ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ محمد خلیل خان 18 ماہ سے جیل میں سزا کاٹ رہا ہے، اب خلیل خان کی 18 مہینے کی سزا کم کرکے 12 ماہ کر دی گئی ہے، محمد خلیل خان جس کا برطانیہ میں کوئی ٹھکانہ نہیں، کو (11 جنوری 2022) کو پریسٹن کراؤن کورٹ میں ایک عوامی جگہ پر بلیڈ آرٹیکل رکھنے کا جرم قبول کرنے کے بعد 12 ماہ کیلئے جیل بھیج دیا گیا ، 9 اگست 2021 کو، محمد خلیل خان مانچسٹر وکٹوریہ اسٹیشن پر ٹرین میں سوار ہوا جو کلیتھرو کی طرف جا رہا تھا، ٹرین میں عملے کے ایک رکن کو ایک مسافر نے متنبہ کیا کہ خلیل خان مستقبل میں تشدد کی کارروائیوں کی دھمکیاں اور 9/11 ، طالبان کے مظالم کے بارے میں تبصرے کر رہا ہے۔ جب ٹرین ڈاروین اسٹیشن پر رکی تو اس مشتبہ شخص سے افسران کی ایک ٹیم ملی، مسافروں کو ٹرین سے محفوظ مقام پر لے جایا گیا، اس کے بعد محمد خلیل خان کو حراست میں لے لیا گیا جہاں اس نے افسران کے ساتھ بدسلوکی کی اور جارحانہ ہو گیا۔ محمد خلیل خان کے پاس موجود تھیلے کی تلاشی میں ایک چاقو برآمد ہوا، اسے عوامی جگہ پر بلیڈ والی چیز رکھنے کے شبہ میں گرفتار کر لیا گیا۔ گریٹر مانچسٹر پولیس کاؤنٹر ٹیررازم پولیسنگ نارتھ ویسٹ کے جاسوس چیف انسپکٹر کی ڈینیسن نے کہاکہ مسافروں کے لیے چلتی ٹرین میں پھنس جانا ایک خوفناک واقعہ تھا جس میں محمد خلیل خان نے دھمکیاں دی تھیں۔ ’’اس کے رویے کی وجہ سے میں ٹرین اسٹیشن پہنچا جہاں اسے حراست میں لے کر احتیاطاً بند کر دیا جس سے مقامی علاقے میں بڑے پیمانے پر خوف و ہراس پھیل گیا۔ میں عوام کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے محمد خلیل خان کی اطلاع دی۔
یورپ سے سے مزید