G N Mughal - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
ہفتہ 7؍ جمادی الثانی 1439ھ 24؍ فروری 2018ء
جی این مغل
February 23, 2018
رنی کوٹ کا قلعہ ۔سندھ کی منی دیوار چین

یہ کالم میں سندھ کے جس مقام پر لکھ رہا ہوں، اس کا شمار نہ سندھ اور نہ پاکستان میں ہوتا ہےمگر اس علاقے کو انتہائی ممتاز تاریخی مقامات میں کہا جاسکتا ہے، مگر کتنے افسوس کی بات ہے کہ اس مقام کے بارے میں جسے ’’رنی کوٹ کا قلعہ‘‘ کہا جاتا ہے، پاکستان کے باقی علاقوں کے عوام کو تو شاید کچھ پتہ بھی نہیں مگر خود سندھ کے عوام کی اکثریت اس مقام...
February 16, 2018
گھر گھر سے ہوشو‘ ہیموں اور دودو نکلے گا

گزشتہ کالموں میں، میں نے اس بات کا ذکر کیا تھا کہ کئی سالوں سے سندھ کے عوام کو جس تکلیف دہ صورتحال کا سامنا تھا اس کے نتیجے میں سندھ صوفی تحریک نئے سرے سے اٹھی ہے مگر جس رخ میں یہ صو فی تحریک آگے بڑھ رہی ہے اس کے مدنظر سندھ کے کئی دانشوروں کا خیال ہے کہ یہ صوفی تحریک سندھ کے ایک نئے ثقافتی انقلاب میں بتدریج تبدیل ہورہی ہے، اس صوفی...
February 09, 2018
سندھ کا ثقافتی انقلاب

گزشتہ کالم میں، میں نے سندھ میں ثقافتی انقلاب کی نوید سنائی تھی اور اس کے کچھ انسان دوستی کے پہلوئوں کا ذکر کیا تھا مگر اب جو میں نے اس سلسلے میں کچھ مزید مطالعہ کیا ہے تو پتہ چلا کہ ثقافتی انقلاب اور انسان دوستی سندھ کے لئے نئے نہیں، اس سلسلے میں حقائق جاننے کے لئے سندھ کی قدیم تاریخ اور آریائوں کے دور کی دھرمی کتابوں ’’ویدوں‘‘...
February 05, 2018
ثقافتی انقلاب سندھ کی دہلیز پر

ہم نے اب تک ثقافتی انقلاب زیادہ تر عوامی جمہوریہ چین کے حوالے سے ہی سنا ہے‘ چیئرمین مائوزے تنگ کی قیادت میں چین میں عوامی انقلاب آچکا تھا مگر اس کے باوجود چین کے عوامی انقلاب کو صحیح رخ دینے میں چین کی انقلابی قیادت کو کچھ دقتیں درپیش آرہی تھیں‘ اسی پس منظر میں چین کی انقلابی قیادت نے چین کے طول و عرض میں ’’ثقافتی انقلاب‘‘...
January 26, 2018
بڑے باپ کی بڑی بیٹی

(گزشتہ سے پیوستہ )کوئی اس سے اتفاق کرے یا نہ کرے دونوں باپ بیٹی ذوالفقار علی بھٹو اور شہید بے نظیر بھٹو پاکستان کی سیاست کے انمول کردار ہیں‘ کمزوریاں کس میں نہیں ہوتیں۔ کمزوریوں سے پاک تو فقط ہمارے نبی حضرت محمد ﷺ تھے‘ باقی شخصیات کے بارے میں رائے قائم کرنے کے لئے ان کی اچھی باتوں اور خامیوں کی بیلنس شیٹ بنائی جاتی ہے‘ آیئے ان...
January 12, 2018
بڑے باپ کی بڑی بیٹی

(گزشتہ سے پیوستہ) یہ حقیقت ہے کہ ذوالفقار علی بھٹو اور شہید بے نظیر بھٹو ایسے سیاستدان تھے جن کا پاکستان کے عوام کی ایک بڑی تعداد بے پناہ احترام کرتی تھی اور کرتی ہے جبکہ یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ ان کی مخالفین کی تعداد بھی کم نہیں جن کا زیادہ تر تعلق حکمران اور مفاد پرست طبقوں سے رہا ہے، بہرحال دونوں باپ بیٹی پاکستان کی تاریخ کی بے...
January 07, 2018
بڑے باپ کی بڑی بیٹی

(گزشتہ سے پیوستہ) اس کالم کا عنوان ’’بڑے باپ کی بڑی بیٹی‘‘ ہے تو اس عنوان کے ساتھ انصاف کا تقاضا ہے کہ پہلے ذوالفقار علی بھٹو کی بہادری اور عوام سے قربت کے بارے میں کم سے کم ایک مثال پیش کروں‘ یہ مثال اس وقت کی ہے جب 1970 ء میں تمام سیاسی پارٹیاں اور رہنما پورے ملک میں انتخابی مہم چلا رہے تھے‘ ان دنوں بھٹو سندھ میں انتخابی مہم میں...
December 29, 2017
بڑے باپ کی بڑی بیٹی

میں آج 27دسمبر کو جنگ کے لئے یہ کالم لکھ رہا ہوں، آج کے دن سے دس سال پہلے محترمہ بے نظیر بھٹو کو راولپنڈی میں گولیاں مار کر شہید کردیا گیا تھا، یہ خاندان بھی عجیب خاندان ہے، اس خاندان کے بڑے جناب ذوالفقار علی بھٹو کو ایک آمر کی خواہش پر پھانسی دے کر شہید کردیا گیا، اس کے چھوٹے بیٹے شاہنواز بھٹو کو فرانس میں زہر دے کر شہید کردیا...
December 22, 2017
موجودہ فوجی قیادت کا تاریخی اعلان

منگل 19دسمبر یقینی طور پر پاکستان کے ایک تاریخی دن کے طور پر یاد کیا جائے گا، اس دن پاکستان کی فوج کے چیف آف اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سینیٹ کے سارے ممبران پر مشتمل کمیٹی سے خطاب کرتے ہوئے ملک سے متعلق حساس ایشوز پر دو ٹوک انداز میں جو اعلانات کئے ہیں ان میں سے ہر اعلان تاریخی نوعیت کا ہے، سچی بات یہ ہے کہ گزشتہ کافی عرصے سے...
December 17, 2017
سندھ کے ساتھ یہ سلوک کیوں؟

آج یہ کالم لکھتے وقت مجھے جو دقت ہورہی ہے اس کا ذکر کرتے ہوئے بھی شدید تکلیف ہورہی ہے‘ یہ مہربانی مرکزی حکومت کی ہے‘ مگر یہ ’’مہربانی‘‘ فقط مجھ پر کیوں؟ یہ مہربانی تو سارے سندھ پر ہے‘ مگر کیا پتہ‘ ہوسکتا ہے کہ یہ مہربانی باقی دو چھوٹے صوبوں پر بھی ہورہی ہو‘ یہ مہربانی یہ ہے کہ آج حیدرآباد کے جس علاقے میں میرا گھر ہے وہاں بجلی...
December 08, 2017
سندھ میں امن و ہم آہنگی کا اعلان نامہ

(سندھ میں امن و ہم آہنگی کے اعلان نامہ کی باقی تفصیلات مندرجہ ذیل ہیں ) آئینی ترامیم آئین کے آرٹیکل15 میں ترمیم کرکے یوں تحریر کیا جائے الف… ’’ہر شہری کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ عوامی مفاد میں عائد کی گئی معقول قانونی پابندیوں کے تحت پاکستان بھر میں آزادانہ طور پر کہیں بھی رہے، آجا سکے یا پاکستان کے کسی بھی حصے میں رہائش پذیر...
December 01, 2017
سندھ میں امن و ہم آہنگی کا اعلان نامہ

میں پچھلے دو ہفتوں سے سندھ میں مختلف برادریوں خاص طور پر سندھی اور اردو بولنے والوں کے مستقل طور پر امن اور ہم آہنگی پیدا کرنے کے سلسلے میں کالم لکھ رہا ہوں، تقریباً سات آٹھ سال قبل سندھ کے کئی ممتاز اردو اور سندھی دانشوروں کی طرف سے اس ایشو پر ایک لمبے عرصے تک مذاکرات کرنے کے بعد اتفاق رائے سے ایک اعلان نامہ پر دستخط کئے گئے تھے...
November 24, 2017
اگر سندھ کو بچانا ہے تو

گزشتہ ہفتے میں نے اپنے کالم میں جس کا عنوان ’’سندھی اور اردو دانشوروں کو ایک بار پھر سر جوڑکر بیٹھنا ہوگا‘‘ تھا۔ کئی سال پہلے ممتاز سندھی اور اردو دانشوروں کی طرف سے سندھ کو لاحق لسانی و نسلی خطرات سے محفوظ کرنے کے لئے کافی عرصے تک باہمی مذاکرات کرنے کے بعد اتفاق رائے سے ’’سندھ میں امن و ہم آہنگی کا اعلان نامہ‘‘ کی منظوری دی...
November 17, 2017
سندھی اور اردو دانشوروں کو پھر ساتھ بیٹھنا ہوگا

سندھ میں رائے ایک بار پھر عام ہے کہ پتہ نہیں ملک کے کچھ طاقتور حلقوں کو نہ سندھ کی خوشحالی اور نہ ہی سندھ کا اتحاد اور یکجہتی پسند ہے۔ سندھ کی صدیوں پرانی تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ انگریز سامراج کے برصغیر پر قبضہ کرنے سے پہلے سندھ ہمیشہ سے ایک آزاد اور خودمختار ملک رہا ہے جس کی سرحدیں کبھی ملتان تک تو کبھی کشمیر تک بھی رہی ہیں۔ مگر...