• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ غذائیت سے بھرپور اور صاف ستھری خوراک آپ کی صحت اور پُرکشش و جاذبِ نظر دِکھنے میں بہت اہم کردار ادا کرتی ہے۔ آپ جس قدر صحت بخش غذائیں کھائیں گے، اتنی ہی زیادہ یہ آپ کے چہرے سے شادابی کی صورت جھلکیں گی۔ اسی لیے تو کہتے ہیں کہ جو آپ کھاتے ہیں وہی دکھائی دیتا ہے۔

اچھی غذا کھانے کا آغاز دن کے آغاز سے ہی ہونا چاہئے۔ شاید آپ نہیں جانتے کہ ایک اچھا اور بھرپور ناشتہ نا صرف آپ کی صحت کو برقرار رکھتا ہے بلکہ آپ کی خوبصورتی میں بھی اضافہ کرتا ہے۔ جو لوگ صحت بخش ناشتہ کرتے ہیں ان کی خوراک میں زیادہ غذائی اجزاء ہوتے ہیں جیسے فائبر، کیلشیم، وٹامن اے اور سی، رائبوفلاوین، زنک اور آئرن۔

طرز زندگی میں کسی بھی تبدیلی کی طرح، روزانہ صحت بخش ناشتہ کی عادت ڈالنے میں وقت لگتا ہے۔ آپ کو یہ جاننے کے لیے کچھ تجربہ کرنے کی ضرورت ہوگی کہ آپ کے خاندان کے لیے کون سی چیز بہترین ہے۔ ناشتے میں اپنی دلچسپی بڑھانے کے لیے نئی ترکیبیں آزمانا، وقت سے پہلے اپنے ناشتے کی منصوبہ بندی کرنا اور اپنے باورچی خانے میں صحت مند انتخاب کے ساتھ سامان ذخیرہ کرنا ناشتے کے وقت کو کامیاب بنانے میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔ آپ کا پسندیدہ صحت بخش ناشتہ کیا ہے؟ ناشتے میں کھانے کیلئے ذیل میں کچھ اشیا بتائی جارہی ہیں، جنہیں اپنے ناشتہ کا حصہ بنا کر مطمئن و مسرور رہیں گے۔

پپیتا

روازنہ ایک سیب کھانا ڈاکٹر سے دور رکھتاہے۔ یہ محاورہ تو اب ہر شخص جانتا ہے اور شاید پُرانا بھی ہوگیا ہے، اب اس کی جگہ پپیتا تجویز کیا جاتا ہے۔ پپیتے کے ساتھ لیموں کا تڑکا آپ کی صبح کو زبردست آغاز فراہم کرتاہے۔ اس میں فائدہ مند پروٹیولائٹک (proteolytic)انزائمز ہوتے ہیں، جو نا صرف آپ کے ہاضمے کے افعال کو بہتر بناتے ہیں بلکہ اپنی سوزش کش خصوصیات کی وجہ سے یہ جسم میں پیدا ہونےوالی جلن یا سوزش کے خلاف بھی کام کرتے ہیں۔ مزید برآں آپ پپیتے کے چھلکے اپنے چہرے پر نرمی سے آہستہ آہستہ ملیں، یہ آپ کی جِلد کو قدرتی طور پر ایکسفولی ایٹ کردے گا۔

تخمِ بالنگا کی پُڈنگ

ناشتے میں تخمِ بالنگا کھانے سے نا صرف آپ کے دن کو زبردست آغاز ملتاہے بلکہ اس کے اندر موجود اومیگا تھری فیٹی ایسڈز آپ کی جِلد کو تروتازہ اور ہائیڈریٹ رکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ جن لوگوں کو انفلیمیشن (جِلد میں جلن یاسوزش) کا مسئلہ یعنی ایکنی اور ایگزیما ہو، ان کے لیے یہ زبردست بوسٹر کا کام کرتاہے۔ اس کے علاوہ تخمِ بالنگا میں سلیکا بھی ہوتا ہے، جو مربوط ٹشوز یعنی عضلات کی بناوٹ میں اہم کردار ادا کرتا ہے، اسی لیے یہ آپ کے بالوں، جِلد اور ناخنوں کے لیے بہت فائدہ مند ہے۔

جامن

اگر آپ کو مزیدار ناشتے کے ساتھ بھرپور اینٹی آکسیڈنٹ خصوصیات چاہئیں تو آپ اپنے ناشتے میں جامن شامل کرلیں۔ اگرچہ یہ عام طور پر ہر موسم میں دستیاب نہیں ہوتے لیکن جب اس کے فائدے آپ کو پتہ چلیں گےتو آپ شدو مد سے اس کی تلاش شرو ع کردیں گے۔ آپ فروٹ چاٹ میں جامن، اسٹرابیری، شریفہ اور بادام وغیرہ ملا کر کھائیں۔ 

ان سب کے اند ر موجود اینٹی آکسیڈنٹس آپ کی جِلد کو فری ریڈیکلزسے محفوظ رکھیں گے اور جِلدکو وقت سے پہلے ڈھلنے سے بچائیں گے۔ ساتھ ہی جامن میں موجود اینٹی انفلیمیٹری خصوصیات، فائدہ مند منرلز جیسے کہ کیلشیم، وٹامن اے، فاسفورس، آئرن اور تھیامائن آپ کی تمام تر صحت کو بھرپور بناتے ہیں، جو آپ کے دمکتےچہرے سےبھی جھلکتی ہے۔

انڈے

دنیا بھر میں ناشتے میں انڈوں کا استعمال بہت مرغوب سمجھا جاتا ہے اور ہرکوئی انھیں طرح طرح کی ریسیپی سے بناکر لطف اُٹھاتا ہے اور اگر آپ اپنے ناشتے میں انڈے استعمال نہیں کرتےتو آپ کو یہ فوراً شروع کردینا چاہئے۔ انڈوں کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہے کہ اس سے مختلف قسم کے ناشتے بن سکتے ہیں اورآپ بور نہیں ہوتے۔ 

غذائیت کی بات کریں تو انڈے پروٹین کا بہترین ذریعہ ہیں اور صبح کے وقت انڈوں سے حاصل ہونے والا پروٹین آپ کے دن بھر کے بلڈ شوگر لیول کو نارمل سطح پر برقرار رکھنے میں معاون ہوتا ہے اور یہ آپ کے ہارمونز پر منفی اثرنہیں ڈالتا۔ انڈے کولاجن پیدا کرنے کے عمل میں بھی تیزی لاتے ہیں، جو جِلد کو جواں رکھنے میں مددگار ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ انڈے وٹامن ڈی کا بھی بہترین ذریعہ ہیں۔

ریڈ اسموتھیز

ریڈ اسموتھیز میں لال غذائیں جیسے کہ تربوز اورچقند ر شامل ہوتے ہیں۔ چقندر فائبر سے بھرپور ہوتا ہے، جس میں کیلوریز بھی کم ہوتی ہیں۔ درج بالا طریقے کے مطابق نصف کپ اِسکمڈ ملک، نصف کپ گریک یوگرڈ، ایک کپ کٹا ہوا تربوز اور ایک سلائس چقند رملا کر انہیں بلینڈ کرلیں۔ 

چقندر کا ذائقہ چونکہ اکثر لوگوں کو اچھا نہیں لگتا، اسی لیے تربوز شامل کرنے سے چقند ر کا ذائقہ دب جاتاہے اور آپ کو ایک مزیدار اسموتھی نوش کرنے کو مل جاتی ہے۔ چقندر کے استعمال سے خون کے سرخ خلیوں میں اضافہ ہوتا ہے،خون پتلاہوتا ہے اور اس کے دورانیہ میں اعتدال آتا ہے، جس کی وجہ سے بلڈ پریشر کنٹرول میں اور انسان صحت مند رہتا ہے۔