آپ آف لائن ہیں
جمعہ 10؍محرم الحرام 1440ھ 21؍ستمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
حُسن بڑھائے ’’کاجل‘‘ آنکھوں کا کاجل صرف ایک، مگر انداز منفرد

رابعہ شیخ

آج پھر حسنِ دل آرا کی وہی دھج ہو گی

وہی خوابیدہ سی آنکھیں، وہی کاجل کی لکیر

آنکھوں کو رعنائی بخشتا ،جاذب نظر ،دلکش،شفاف ،اور خوشنما بناتا کاجل اکیسویں صدی میں ہی نہیں بلکہ ہر زمانےمیں خواتین کا انتخاب رہاہے۔آنکھوں میں کاجل کے ذریعے موٹی دھاریاں یا لکیریںانہیں مزید نمایاںکرتی ہیں۔قدیم تہذیبوں میں اس کا ذکر ملنے کے باعث وہاں سے بھی کیا جاتا ہے۔ 

بالی ووڈ ہو یا لالی ووڈ، ماضی ہو یا حال کاجل کا استعمال ہیروئنوں میں بھی دیکھا گیا ہے ۔ اس کی اہمیت اس وقت زیادہ بڑھ جاتی ہے جب خواتین کے حسن کے لئے مختص سولہ سنگھار میں بھی آنکھ کا کاجل دیکھنے کو ملتا ہےیہی وجہ ہے کہ عرصہ درازسے کاجل خواتین میں مقبول رہاہے یہ آنکھوں کو شفاف رکھنے ،جاذب نظر اور پرکشش بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے ۔ کاجل نہ صرف قدرتی حسن یا آنکھوں کی خوبصورتی بڑھانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے بلکہ مختلف امراض کے علاج کے لئے بھی ضروری سمجھاجاتا ہے۔

جہاں کاجل اتنا اہم ہے وہیں اکثر لوگ اس کے استعمال سے کتراتے نظر آتے ہیں ان کے مطابق کاجل کا زیادہ استعمال آنکھوں کے لئے نقصان دہ ثابت ہوتا ہے ۔لیکن یہ تاثر غلط ہے کیونکہ اگر آپ مارکیٹ میں موجود مختلف برانڈز میں سےمعیاری کاجل کی پہچان رکھتے ہیں تو کاجل ضرور لگائیں۔ غیرمعیاری اور سستا کاجل قطعا استعمال نہیں کرنا چاہئیے کیونکہ اس سے آئی انفیکشن کا خطرہ رہتا ہے ۔

ماہرین کاجل لگانے سےپہلے مختلف قسم کی ہدایا ت دیتے نظر آتے ہیں ان کا کہنا ہے کہ کاجل لگانے سے قبل آنکھوں کو ٹھنڈے پانی سے دھو یا جائے تاکہ پلکوں اور آنکھوں کے اطراف گرد صاف ہو جائے گا آنکھوں کے اطراف جلد خشک ہے تو آپ موئسچرائزنگ لوشن لگائیں یا اس لوشن کا آنکھوں کے اطراف ہلکا مساج کریں۔اس کے برخلاف آپ کی جلد روغنی ہے تو اس شکایت کو دور کرنے کیلئے پاؤڈر بھی استعمال کر سکتی ہیں۔

دوسری جانب ماہرین چشم سستے کاجل کی خریداری سے بھی منع کرتے نظر آتے ہیں ان کے مطابق سستے کاجل عموماً لیڈ سلفائیڈ سے تیار کیا جاتے ہیںجو آپ کی آنکھوں کو کجرارا تو بناسکتا ہے لیکن اس کا مستقل استعمال آنکھوں کے لیے سخت نقصان دہ بھی ثابت ہوسکتا ہے اس لئے ضروری ہے کہ کاجل ہمیشہ معیاری استعمال کریںاس کے ذریعے آنکھیں نرم تاثر دیں گی بلکہ چہرہ بھی خوشنما دکھائی دینے لگے گا تاہم اگر آپ کاجل سازی کے طریقہ سے واقف نہیں ہیں تو کاجل لگانے کا منصوبہ ترک کردیں۔ 

ماضی میں گھر کی ضعیف العمر خواتین نیم‘ لہسن سے کاجل تیار کرنے کا فن جانا کرتی تھیں جو آنکھوں کے لئے مناسب سمجھا جاتا تھا کیونکہ نیم کے پھولوں سے تیارکردہ کاجل آنکھوں کی صحت کیلئے فائدہ مند تسلیم کیا جاتا ہے ۔اگر آپ کاجل سازی کے طریقہ سے واقف نہیں ہیں تو یہ خیال ترک کر دیں۔

آج کل خواتین میں مختلف قسم کے آئی میک اپ کا استعمال بہت مقبول ہورہا ہے اور ان کی خوبصورتی بڑھانے کے لیے نت نئے میک اپ ٹولز اور مصنوعات مارکیٹ میں موجود ہوتی ہیں جن کے باعث اکثر خواتین کی آنکھوں کی خوبصورتی ماند پڑتی جاتی ہے لیکن کیا آپ جانتی ہیں کاجل کے ذریعے بھی آنکھوں کی خوبصورتی میں اضافہ کیا جاسکتا ہے چونکہ آج کل لائٹ میک اپ کا رواج عام ہے ۔ 

لڑکیاں لائٹ میک اپ کے ساتھ کاجل کو اس انداز سے لگاتی ہیں کہ ان کامیک اپ ایک دم نمایاں نظرآتا ہے ۔ آٗئیے پھر آج بات کرتے ہیں میک اپ کے ان اسٹائل پر جن کے ذریعے آنکھوں کی خوبصورتی میں مزید اضافہ کیا جاسکتا ہے۔

بیسک کاجل اسٹائل

کاجل کا وہ اسٹائل جس میں اوپر اور نیچے ایک ہی گولائی یا لکیر میں کاجل لگایا جائے تو اس اسٹائل کو بیسک کاجل اسٹائل کہا جاتا ہے۔اگر آپ جلد ی کسی تقریب میں جانا چاہتی ہیں تو بیسک کاجل اسٹائل لگائیں یہ بآسانی دو منٹ میں آپ کی آنکھوں کی خوبصورتی میں اضافہ کردے گا ۔

اپر لیش لائن کاجل اسٹائل

اگر آپ کسی عام تقریب میں جارہی ہیں اپر لیش لائن کاجل اسٹائل آپ کے لئے بہترین ہے۔لیئن لائن کاجل استعمال کرنے کے لئے آنکھ کے اوپری حصے پر کاجل لگائیں اور نچلے حصے کو یونہی چھوڑدیں یہ اسٹائل آپ کی آنکھوں کی انفرادیت میں اضافہ کرے گا ۔

لوئرلیش سٹائل کاجل

اگر آپ زیادہ میک اپ نہیں کرنا چاہتیں تو اس اسٹائل کے ساتھ آپ اپنی یہ خواہش بخوبی پوری کرسکتی ہیں۔لوئر لیش اسٹائل میں آنکھ کے صرف نچلے حصے پر کاجل لگایا جاتا ہے اور پیوٹوں کو خالی چھوڑا جاتا ہے یہ شوخ اسٹائل اس وقت اپنایا جاتا ہے جب آپ بھرپور میک اپ نہیں کرنا چاہتیں آپ اس اسٹائل کے لائنر کورات کی تقریب میں لگاکر جائیں تو لوگ داد دیئے بغیر نہیں رہ سکیں گے ۔

اسموکی آئی اسٹائل کاجل

اگر آپ اسموکی آئی اسٹائل کاجل لگانا چاہتے ہیں توآنکھوں کی لیش لائن پر کاجل لگائیں کچھ دیر تھوڑی سی مقدار میں پٹرولیم جیلی لے کر آنکھوں کو ہلکے ہاتھ سے رگڑیں جس سے کاجل اسموکی اسٹائل کا لک دے گا۔

ڈو کاجل اسٹائل

یہ اسٹائل ستر کی دہائی سے بالی ووڈ ہیروئنوں میں خاصامقبول ہے جس کے تحت آنکھ کے اوپری اور نچلے حصے میںتھوڑی گہری لکیروں کے ساتھ کاجل لگایا جاتا ہےاور آنکھوں کے کارنر کو uشیپ میں تھوڑی سی موٹی لکیر کے ساتھ کاجل لگایاجاتا ہے ۔یہ اسٹائل آنکھوں کی جاذبیت میں اضافہ کرتا ہے ۔

مصری کاجل اسٹائل

خواتین منفرد نظر آنے کی خواہشمند خواتین مصری اسٹائل سے ہی کاجل لگاتی ہیں ۔ آنکھوں کے پیوٹوں پر پلکوں سے لیکر بھنوؤں کی ہڈی تک کوئی میٹلک شیلڈ لگالیں ۔ اب آنکھ کے نچلے حصے پر گہری لائن بنائیں لائن کاآغاز آنکھ کے اندرونی گوشے سے کریں اور اس کااختتام آنکھ کے بیرونی کونے پر کریں ۔

بیرونی گوشے کی جانب کاجل قدرے بڑھا کر اس طرح لگائیں کہ یہ اوپر والی لائن سے مل جائے اور آنکھوں کے گر وایک حاشیہ سابنائیں۔ بس یہی ہے کلاسیکی مصری سٹائل کاجل ، اب کوئی وجہ نہیں کہ آپ کسی بھی تقریب میں ایسا کاجل لگا کر جائیں اور منفرد نظر نہ آئیں ۔

سنگل اور ڈبل ونگ کاجل

اس اسٹائل کو اپنانے کیلئے ہمیں آنکھ کے اوپر لگائے گئے کاجل کی لکیر (لائن ) قدرے اوپر اٹھا کر اس طرح بنانی ہوگی جیسے کسی محوپرواز پرندے کا پرہوتا ہے ۔ ڈبل ونگ اسٹائل کیلئے آنکھوں کے اُوپر والے حصے پر خوبصورت ساونگ بنایاجاتا ہے پھر نچلی سطح (یعنی پلکوں تلے ) کاجل کو اس طرح بڑھا کر لگائیں کہ ایک اور ونگ بن جائے اس کا رخ نیچے کی جانب ایک قوس بناتا ہوا نظر آئے ۔ ڈبل ونگ سٹائل یہ کاجل تقریبات کیلئے موزوں انتخاب ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں