| |
Home Page
بدھ 24 ربیع الاوّل 1439ھ 13 دسمبر2017ء
ڈاکٹر فر قان حمید
December 13, 2017
بیت المقدس مملکتِ فلسطین کا دارالحکومت؟

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک ایسے وقت میں القدس کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کرنے کا فیصلہ سناتے ہوئے عالمِ اسلام کو ایک ایسی آگ میں دھکیل دیا ہے جس میں عالمِ اسلام کے چند ایک امریکہ نواز ممالک کے ساتھ ساتھ امریکہ کے خود جل کر بھسم ہونے کی راہ ہموار ہو جائے گی۔ صدر ٹرمپ اگرچہ امریکی سفارت خانے کو جلد ہی القدس منتقل...
December 06, 2017
سیکولرازم کیوں ضروری ہے؟

راقم اس سے قبل بھی کئی بار پاکستان میں سیکولر ازم کی ضرورت پر زور دے چکا ہے اور اس بارے میں مختلف اوقات میں کئی ایک کالم بھی تحریر کرچکا ہےلیکن موجودہ دورکے حالات کو دیکھتے ہوئے اس کی ضرورت کو ایک بار پھر اجاگر کرنا اپنا فرض سمجھتا ہوں۔ چندمذہبی رہنماؤں نے اپنے خیالات کی ترویج کیلئے سیکولر ازم سے نفرت پیدا کرنے کی کوشش میں اس کو...
November 29, 2017
امریکہ کی ترکی سے متعلق پالیسی

جدید جمہوریہ ترکی اپنے قیام سےلے کر آج تک امریکہ کے ایک قریبی اتحادی کا رول ادا کرتا چلا آیا ہے اور دونوں ممالک ایک دوسرے کیلئے لازم و ملزوم سمجھے جاتے رہے ہیں۔ اگرچہ جدید جمہوریہ ترکی کے اتاترک کے دور ہی میں امریکہ سے قریبی تعلقات قائم ہوچکے تھے لیکن ان دونوں ممالک کے درمیان عملی اتحاد نیٹو اور سینٹو کی رکنیت حاصل کرنے کے موقع...
November 22, 2017
فتح اللہ گولن اور حقیقت

پاکستان میں فتح اللہ گولن کو ترکی ہی کے حوالے سے جانا اور پہچانا جاتا ہے اور ابھی تک کئی حلقوں کی جانب سے ان کی پذیرائی کی جا رہی ہے لیکن جب ترکی ہی میں ان کو دہشت گرد قرار دیا جاچکا ہے تو ہمیں پاکستان میں بھی فتح اللہ گولن کو دہشت گرد قرار دینے کی ضرورت ہے کیونکہ ترکی اور پاکستان دو ایسے برادر اور دوست ممالک ہیں جن کی دوستی اور...
November 09, 2017
جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی کے اقتدار کے 15سال

تین نومبر کو ترکی میں جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی (آق پارٹی) کو اقتدار میں آئے ہوئے پندرہ سال مکمل ہو چکے ہیں۔ دنیا میں بہت ہی کم جماعتوں کو اپنے قیام کے تھوڑے ہی عرصے بعد اقتدار حاصل ہونے اور بغیر کسی وقفے کے مسلسل اقتدار میں رہنے کا موقع حاصل ہوا ہے۔ یہ جماعت 14اگست 2001ء میں رجب طیب ایردوان کی قیادت میں قائم کی گئی تھی اور اپنے قیام...
November 01, 2017
جمہوریہ ترکی، اتاترک سے ایردوان تک

تین براعظموں تک پھیلی ہوئی عالمِ اسلام کی واحد مملکت ’ سلطنتِ عثمانیہ‘کے خاتمے کے بعد ترکی زبان بولنے والے علاقوں پر مشتمل جغرافیے میں ’ جدید جمہوریہ ترکی‘ کے نام سے 29اکتوبر 1923میں نئی مملکت معرضِ وجود میں آئی ، گزشتہ ہفتےاس کے قیام کی 94ویں سالگرہ منائی گئی۔ اس نئی مملکت کو اپنے قیام کے ساتھ ہی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔...
October 25, 2017
استنبول میں ڈی ایٹ سربراہی اجلاس

پندرہ برس قبل جب ترکی میں پہلی بار اسلام پسند رہنما نجم الدین ایربکان کی قیادت میں حکومت تشکیل دی گئی تو انہوں نے سب سے پہلے اسلامی ترقی پذیر ممالک پر مشتمل اقتصادی اتحاد کو قائم کرنے کے لئے یورپی یونین کی طرز پر ڈی ایٹ تنظیم کے قیام کی بنیاد رکھی۔ مرحوم وزیراعظم نجم الدین ایربکان نے 22 اکتوبر 1996ء میں ان ممالک کے ماہرین اور وزراء پر...
October 18, 2017
ترک امریکہ سفارتی تعلقات میں کشیدگی

ترکی اور امریکہ دو ایسے اتحادی ممالک ہیں جن کی دوستی اور اتحاد کی جڑیں بڑی مضبوط ہیں اور یہ دوستی اور اتحاد آج تک تمام امتحانوں میں پورا اترا ہے اور کامیابی سے ہمکنار ہوا ہے۔ اگرچہ امریکہ کے سلطنتِ عثمانیہ کے ساتھ بھی اچھے تعلقات قائم تھے لیکن جدید جمہوریہ ترکی کے قیام کے بعد ترکی اور امریکہ ایک دوسرے کے اتنے قریب آگئے کہ دونوں...
October 11, 2017
ماضی تا حال۔ ترک ایران تعلقات

ترکی اور ایران کے تعلقات کبھی پاکستان اور ترکی جیسے تعلقات کی طرح استحکام حاصل نہیں کرسکے ہیں اور نہ ہی ان تعلقات میں کبھی گرمجوشی دیکھی گئی۔ اس کی سب سے بڑی وجہ دونوں ممالک کا ماضی میں عظیم سلطنتوں اور ریاستوں کا مالک ہونا اور عظیم ثقافت، علم، ادب اور تاریخ سے گہرا لگائو رکھنا ہے۔ ترکی اور ایران کے درمیان تعلقات کی بنیاد دونوں...
October 04, 2017
ترکی۔ شمالی عراق میں داخل ہونے کی تیاریاں

 ترکی اور شمالی عراقی کرد انتظامیہ جس کے ترکی کے ساتھ حالیہ کچھ عرصے سے بڑے گہرے تعلقات چلے آرہے تھے اب یہ تعلقات نہ صرف سردمہری کا شکار ہوچکے ہیں بلکہ ان دونوں کے درمیان جاری یہ سردمہری کسی وقت بھی ناخوشگوار واقعہ کا سبب بن سکتی ہے۔ شمالی عراق میں عراقی کرد انتظامیہ کی جانب سے کروائے جانے والے 25ستمبر کے کردش آزادی سے متعلق...
September 27, 2017
شمالی عراق میں کُردش آزادی ریفرنڈم

ترکی،عراق، شام اور ایران جہاں پر 3کروڑ75 لاکھ کرد آباد ہیں اس پورے علاقے کو عام طور پر ’’کردستان‘‘ کے نام سے جانا اور پہچانا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ بھی دنیا کے مختلف علاقوں میں ایک کروڑ کے لگ بھگ کرد آباد ہیں۔ سلطنتِ عثمانیہ کے دور میں بھی کردوں کے اس علاقے کو ’’کردستان‘‘ کے نام سے یاد کیا جاتا تھا اور اسے ایک بہت بڑے صوبے کی...
September 06, 2017
روہنگیا مسلمانوں پر ظلم و ستم اور ترکی

کتنی عجیب بات ہے کہ دنیا کے کسی دورافتادہ گوشے میں اگر کسی غیرمسلم کی نکسیر بھی پھوٹ جائے تو انسانی حقوق کے تحفظ کی ٹھیکیدار اور علمبردار نام نہاد تنظیمیں آسمان سر پر اٹھالیتی ہیں اور میڈیا ان کی کوریج کرنا اپنا فرض سمجھتا ہےجبکہ مسلمانوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ بھی ٹوٹ جائیں تو یہ نام نہاد تنظیمیں ٹس سے مس نہیں ہوتیں۔ فلسطین اور...
August 23, 2017
ایردوان اور سیکولرازم

ترکی کے عظیم رہنما رجب طیب ایردوان کے دور سے قبل جب ہم ترکی میں سیکولرازم کا جائزہ لیتے ہیں تو ہمیں وہ سیکولرازم مذہب اسلام کےمخالف ہونے کے ساتھ ساتھ یک طرفہ نام نہاد سیکولراز م کے طور پر دکھائی دیتا ہے حالانکہ سیکولرازم کی اصطلاح دینے والوں نے اسے ریاست کے معاملات یا امور میں کسی بھی مذہب کو برتری نہ دینے بلکہ تمام مذاہب کے ساتھ...
August 16, 2017
الوداع ! سفیر ِ پاکستان

آج اپنے اس کالم میں ایسی ایک شخصیت کا ذکر کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے اپنی جدو جہد اور محنت کے بل بوتے پر پاکستان کی سفارتی تاریخ میں اپنا نام رقم کروایا ۔ جی ہاں میری مراد پاکستان کے دوست اور برادر ملک ترکی میں دو سال چار ماہ سفیرِ پاکستان کی حیثیت سے فرائض ادا کرنے کے بعد پاکستان کے دشمن ملک بھارت میں ہائی کمشنر کے طور پر فرائض ادا...