• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

نئے سپہ سالار پاکستان کے والد سی بی ٹیکنیکل اسکول کے پرنسپل رہے

اسلام آباد (رپورٹ:حنیف خالد) سپہ سالار پاکستان جنرل سید عاصم منیر کے والد بزرگوار شعبہ تدریس سے تعلق رکھتے تھے۔ اُن کا نام سید سرور منیر ہے جو سی بی ٹیکنیکل ہائی سکول طارق آباد لال کرتی راولپنڈی کینٹ کے 1972ء سے 1985ء تک پرنسپل رہے۔ پاکستان کے نئے آرمی چیف عاصم منیر کے بڑے بھائی کا نام قاسم منیر ہے جو بیورو کریٹ تھے اور بنیادی سکیل 22میں عہدے کی معیاد مکمل کر کے تین سال پہلے ریٹائر ہوئے۔ جنرل عاصم منیر کی دو بہنیں اور تین بھائی ہیں۔ ایوان تجارت و صنعت راولپنڈی کے سابق صدر ایس ایم نسیم کے چھوٹے بھائی حافظ الطاف الرحمان کے ساتھ اُس وقت قرآن پاک حفظ کرتے رہے جب عاصم منیر لیفٹیننٹ کرنل کے عہدے پر فائز ہوئے۔ اُنکے خاندان کا گھر راولپنڈی کے معروف علاقے ڈھیری حسن آباد کی کنٹونمنٹ بورڈ ڈسپنسری والی سٹریٹ میں ہوا کرتا تھا جہاں سے وہ شفٹ ہو چکے ہیں۔ جنرل عاصم منیر راولپنڈی ڈھیری حسن آباد لال کرتی جسے طارق آباد بھی کہا جا رہا ہے وہاں کے معروف سید خاندان کے چشم و چراغ ہیں۔ علاقے کی ایک اہم شخصیت اور سابق صدر راولپنڈی چیمبر آف کامرس نے جنگ سے گفتگو کرتے ہوئے نئے سہ سالار پاکستان کے خاندان کے بارے میں اہم معلومات فراہم کیں۔ اُنہوں نے بتایا کہ عاصم منیر کے علاوہ قاسم منیر جو اُنکے بڑے بھائی ہیں اور دو بہنیں بھی حافظ الطاف الرحمان کے ساتھ قرآن پاک حفظ کیا کرتی تھیں۔ ڈھیری حسن آباد کے دیرینہ رہائشی راجہ خاندان کے ایک رکن راجہ حنیف نے جنگ کو بتایا کہ نئے آرمی چیف بننے والے جنرل عاصم منیر کے آرمی چیف بننے پر ڈھیری حسن آباد بالخصوص راولپنڈی کنٹونمنٹ کے رہائشیوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے اور وہ اسے اپنے لئے بیحد قابل فخر قرار دیتے ہیں۔ جنرل عاصم منیر سپہ سالار پاکستان بننے تک جی ایچ کیو میں کوارٹر ماسٹر جنرل کے عہدے پر فائز رہے۔ جنرل عاصم منیر ماضی میں کور کمانڈر گوجرانوالہ‘ ڈی جی آئی ایس آئی‘ ڈی جی ملٹری انٹیلی جنس‘ ایف سی این اے کے کمانڈر کے اہم ترین عہدوں پر قومی خدمات سرانجام دیتے رہے۔ جنرل عاصم منیر نے ملٹری اکیڈمی کاکول سے نہیں بلکہ آفیسر ٹریننگ سکول منگلا (او ٹی ایس) سے پاکستان آرمی میں شمولیت اختیار کی۔ جنرل عاصم منیر آرمی چیف بننے والے پاکستان آرمی کے دوسرے آرمی چیف ہیں جو آفیسر ٹریننگ سکول منگلا سے فارغ التحصیل ہو کر آئے۔ اس سے پہلے جنرل محمد ضیاء الحق آفیسر ٹریننگ سکول منگلا سے فارغ التحصیل ہو کر پاک آرمی میں کمیشن حاصل کرنے والے پہلے آرمی چیف بنے تھے۔ جنرل عاصم منیر 17ویں او ٹی ایس کورس سے پاس آئوٹ ہوئے تھے۔ جنرل عاصم منیر فوج کے 14لیفٹیننٹ جنرل صاحبان کی فہرست میں پہلے نمبر پر ہیں اور وہ آرمی چیف کی تعیناتی کیلئے سینئر ترین لیفٹیننٹ جنرل ہیں۔ علاقے کے ایک اہم سماجی رہنما محمد حنیف کے مطابق نئے چیف آف آرمی سٹاف جنرل حافظ سید عاصم منیر کے والد بزرگوار سرور منیر مرحوم کے صاحبزادے ہیں۔ عاصم منیر کے ایک بھائی بلوچستان تک میں سرکاری سروس مکمل کر کے ریٹائر ہوئے ہیں۔ انکے دوسرے بھائی سید ہاشم منیر اپنے والد مرحوم کی طرح اب بھی ایف جی ٹیکنیکل ہائی سکول طارق آباد راولپنڈی کینٹ میں تدریسی فریضہ ادا کر رہے ہیں۔ انکی رہائش ڈھیری حسن آباد چکلالہ کینٹ راولپنڈی میں بتائی گئی ہے۔
اہم خبریں سے مزید