• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اسرائیلی بمباری: کہاں ہے غم وغصہ؟ کیا انسانیت مرگئی؟


مسجد اقصیٰ میں ایک طرف آگ اور دوسری طرف یہودیوں کے جشن نے عالمی برادری کی بے حسی پر سنگین سوالات اٹھادیے۔

سینیٹر فیصل سبزواری نے اس حوالے سے کہا کہ اقوام متحدہ کی اسرائیلی جارحیت پر صرف بیان بازی، او آئی سی کی طرف سے کوئی موثر ردعمل نہ ہونا اور عالمی طاقتوں کا امتیازی سلوک اسرائیل کے اس ریاستی پاگل پن کا ذمہ دار ہے۔

وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا کہ مسجد اقصیٰ میں فلسطینی نمازیوں پر اسرائیلی حملہ ریاستی دہشت گردی کی بدترین مثال ہے۔۔


انہوں نے بدترین اسرائیلی بمباری پر سوال کیا کہ کہاں ہے غم وغصہ؟ کیا انسانیت مرگئی؟

سینیٹر شیری رحمٰن نے بھی اسرائیلیوں کے جشن کی وڈیو ری ٹوئٹ کی۔

وڈیو میں دیکھا جاسکتاہے کہ مسجد اقصیٰ میں ایک طرف نمازیوں پر اسرائیلی فائرنگ اور شیلنگ کے موقع پر آگ لگی ہے اور دوسری طرف سیکڑوں یہودی بیت المقدس پر قبضے کے 54 سال مکمل ہونے کا جشن منا رہے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید