• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

اداکارہ نہ ہوتی تو کیا ہوتی؟ کریتی سینن نے راز بتادیا

بالی ووڈ کی خوبرو اداکارہ کریتی سینن نے اپنے بیک اپ کیریئر آپشن کے بارے میں بتادیا۔

بالی ووڈ اداکارہ نے فلم انڈسٹری میں 2014ء میں قسمت آزمائی اور اس میں ناکامی پر بیک اپ پلان سے متعلق اظہار خیال کیا۔

دوران گفتگو انہوں نے بالی ووڈ میں جب کیریئر کا آغاز کیا تو میں غیر یقینی کا شکار تھی، اس لیے بیک اپ کے طور پر جی ایم اے ٹی ٹیسٹ میں اسکور کر رکھا تھا۔

کریتی سینن کا کہنا تھا کہ ایک وقت تھا کہ اُن کے والدین بالی ووڈ میں ان کے کیریئر سے متعلق فکر مند تھے کیونکہ فلم میں کام کو محفوظ کیریئر نہیں سمجھا جاتا۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ 9 سے 5 کی نوکری کی طرح ہے، آپ کی فلمیں چلتی ہیں تو انڈسٹری میں آپ کو کام ملتا ہے اگر نہیں تو آپ کو کام نہیں ملے گا۔

بالی ووڈ اداکارہ نے مزید کہا کہ میرے والدین متوسط طبقے سے تعلق رکھتے ہیں، جو میرے کیریئر کے حوالے شکوک و شبہات کا شکار تھے۔

کریتی سینن نے یہ بھی کہا کہ یہی وجہ تھی کہ والدین نے مجھ سے کہا کہ پہلے آپ انجینئرنگ کی ڈگری مکمل کرلو، مجھے خوشی ہے میں ایسا کرلیا، یہی وجہ ہے کہ میں ذہنی طور پر سکون ہوں۔

انہوں نے کہا کہ یہی وجہ ہے کہ میں بے چین نہیں بلکہ پرجوش تھی، ایسا تب ہوتا ہے جب آپ کو پتا ہے کہ ماضی میں کوئی غلط فیصلہ نہیں کیا۔

کریتی سین نے بتایا کہ وہ پڑھاکو بچی تھی، وہ تعلیم یافتہ فیملی سے تعلق رکھتی ہے،اُس کی والدہ پروفیسر اور والد چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ والدین نے مجھ سے کہا آپ اپنے خوابوں کی پیروی کریں تاکہ آپ کو پچھتاوا نہ ہو، لیکن اس سے قبل جی ایم اے ٹی کا امتحان دے لیں کیونکہ یہ اسکور 5 سالوں کے لیے ویلڈ رہتا ہے۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید