• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

عثمان مختار اور خاتون کے وائس نوٹس لیک

اداکار عثمان مختار کی جانب سے ہراساں، بلیک میل اور دھمکیاں دینےکے الزامات پر ڈیجیٹل آرٹسٹ مہروز وسیم نے جواباََ اداکار کی خاتون کے ساتھ ہونے والی چیٹ (گفتگو) کے اسکرین شاٹس اور وائس نوٹس لیک کردیے ۔

مہرروز وسیم نےفوٹو اینڈ ویڈیو ایپ انسٹا گرام پر ہراساں، بلیک میل اور دھمکیاں دینےکے الزامات کا جواب دیتے ہوئے عثمان مختار کی ان کے ساتھ ہونے والی چیٹ کے اسکرین شاٹس اور وائس نوٹس شیئر کرتے ہوئے اداکار پر الزام لگایا ہے کہ عثمان مختار نے انہیں ہراساں کیا ۔


انہوں نے وائس نوٹس شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ’کیا یہ ایک پیشہ ور شریف آدمی ہے؟‘

مہروز وسیم کی جانب سے شیئر کیے گئے وائس نوٹس میں اداکار عثمان مختار ڈیجیٹل آرٹسٹ مہروز وسیم کے غیر پیشہ ورانہ رویے کے بارے میں بات کررہے ہیں ۔

انہوں نے وائس نوٹس کے بارے میں تفصیل بتاتے ہوئے لکھا کہ ’یہاں عثمان مختارنے مجھے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ سے ایک بی ٹی ایس فوٹو ہٹانے کے لیےدھمکی دی جس کے استعمال نہ کرنےکے بارے میں انہوں نے مجھےکبھی نہیں کہا۔ میں نے اس فوٹو کو استعمال کیا کیونکہ انہوں نےکبھی وہ پروموشنل مواد نہیں بنایا جس کا وعدہ کیا۔‘

مہروز وسیم نے مزید لکھا کہ ’اس سے قبل انہوں نے خود کریڈٹ لسٹ میں حماد حنفی کا نام شامل کیا ۔ یہ ان کی تصویر تھی جو وہ مجھے ہٹانے کو کہہ رہے تھے۔‘


ڈیجیٹل آرٹسٹ مہرروز وسیم نے عثمان مختار کے ساتھ ہونے والی چیٹ کے اسکرین شاٹس شیئرکرتےہوئےلکھا کہ اداکار جسے ہراساں، بلیک میل اور دھمکیاں دینا کہہ رہے ہیں وہ ایک معذرت تھی جو میں نےان سے کی۔

خیال رہےکہ اداکار عثمان مختار کی جانب سے نام ظاہر کیے بغیر ایک خاتون آرٹسٹ پر ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

انٹرٹینمنٹ سے مزید