آپ آف لائن ہیں
اتوار7؍ ربیع الاوّل1442ھ 25؍اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

پاکستان میں انصاف لینا باقی ممالک سے مختلف ہے: سنتھیا

امریکی شہری و بلاگر سنتھیا ڈی رچی کہتی ہیں کہ پاکستان میں زیادتی کی شکار خاتون کو ہی شک کی نگاہوں سے دیکھا جاتا ہے، اس ملک میں انصاف لینا باقی ممالک سے مختلف ہے۔

امریکی شہری و بلاگر سنتھیا ڈی رچی اپنے خلاف پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما و سینیٹر رحمٰن ملک کے قذف کے مقدمے کی سماعت کے لیے ڈسٹرکٹ کورٹ اسلام آباد میں پیش ہوئیں۔

اس موقع پر سنتھیا ڈی رچی نے ’جیو نیوز‘ سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھے کیوں ڈی پورٹ کرنے کا کہا جاتا ہے، اگر میں غلط ہوں تو ثابت کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ میں نے اب تک جج سے ڈائریکٹ بات نہیں کی مگر میں کرنا چاہوں گی، پاکستان میں زیادتی کے حوالے سے کھلم کھلا بات کر رہی ہوں۔

سنتھیا ڈی رچی نے کہا کہ آج سے پہلے ان موضوعات پر پاکستان میں بات نہیں کی جاتی تھی، غیرت، عزت اور شرم کے باعث عورتیں زیادتی پر بات نہیں کرتیں۔

ان کا کہنا ہے کہ رحمٰن ملک، مخدوم شہاب اور پیپلز پارٹی کی جانب سے مفاہمت کا کوئی پیغام نہیں ملا، حال ہی میں موبائل اور ٹویٹر پر ہراساں کرنے والے میسیج موصول ہوئے ہیں۔

امریکی شہری کا مزید کہنا ہے کہ سابق وزیرِ داخلہ رحمٰن ملک نے کمپلینٹ فائل کی ہے، اب وہ کیوں پیشیوں پر غیر حاضر ہیں؟

سنتھیا ڈی رچی کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس ملک میں انصاف لینا باقی ممالک سے مختلف ہے، چیلنجنگ صورتِ حال آپ کو اور مضبوط بنا دیتی ہے۔


اس موقع پر سنتھیا رچی کے وکیل عمران فیروز نے بتایا کہ عدالت کو بتایا ہے کہ چوتھی سماعت ہے اور رحمٰن ملک کی جانب سے کوئی پیش نہیں ہو رہا۔

انہوں نے کہا کہ رحمٰن ملک کی جانب سے کوئی وکیل بھی پیش نہیں ہو رہا، ہر بار کہا جاتا ہے وہ میسر نہیں، عدالت نے اگلی پیشی پر رحمٰن ملک کی جانب سے وکیل کو لازمی پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔

عمران فیروز نے یہ بھی کہا کہ عدالت نے کہا ہے کہ اگلی پیشی پر دونوں پارٹیاں بحث کریں گی، کیس کی آئندہ سماعت 10 اکتوبر کو ہے، بحث کے بعد عدالت فیصلہ سنائے گی۔

قومی خبریں سے مزید